President welcomes ICJ ruling on the prevention and punishment of the crime of genocide in Gaza

PR No. 15/2024

Islamabad, 26 January 2024: Welcoming the ruling of the International Court of Justice (ICJ) on the prevention and punishment of the crime of genocide in the Gaza Strip, President Dr Arif Alvi has said that it was an outstanding judgment. "Israel must immediately stop the genocide and bloodshed of the innocent civilians in Gaza", he stated. He appreciated the ruling of ICJ asking Israel to fulfil its obligations under the Genocide Convention towards Palestinians in Gaza by taking all measures within its power to prevent the commission of all acts within the scope of Article II of the Genocide Convention and enabling the provision of urgently needed "basic services and humanitarian assistance" to the Palestinians in Gaza.

The President stated that the ruling had exposed the inhuman acts and barbarism being committed by Israel, adding that Israel had transgressed all boundaries of humanity by targeting women, children, and hospitals and didn't even spare people who were standing in queue for food, yesterday.

The President urged the international community and other organs of the United Nations, particularly the Security Council, to take steps for an immediate ceasefire in Gaza and prevent Israel from committing further bloodshed in Palestine.

The President deeply appreciated the bold stance of South Africa by taking Israel to ICJ to hold it accountable for its acts of genocide.

***

اسلام آباد، 26 جنوری 2024: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے غزہ کی پٹی میں نسل کشی کے جرم کی روک تھام اور سزا سے متعلق عالمی عدالت انصاف (آئی سی جے) کے فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ایک بہترین فیصلہ ہے۔  انہوں نے کہا کہ اسرائیل کو فوری طور پر غزہ میں معصوم شہریوں کی نسل کشی اور خونریزی کو روکنا ہوگا۔  انہوں نے آئی سی جے کے فیصلے کو سراہا جس میں اسرائیل کو غزہ میں فلسطینیوں کی جانب نسل کشی کنونشن کے تحت اپنی ذمہ داریاں پوری کرنے،  نسل کشی کنونشن کے آرٹیکل II کے دائرہ کار میں آنے والی تمام کارروائیوں کو روکنے کے لیے تمام اقدامات لینے اور  غزہ میں فلسطینیوں کو فوری طور پر درکار "بنیادی خدمات اور انسانی امداد" کی فراہمی کا کہا گیا ہے۔

 صدر مملکت نے کہا کہ اس فیصلے نے اسرائیل کی جانب سے کی جانے والی غیر انسانی کارروائیوں اور بربریت کو بے نقاب کر دیا ہے، انہوں نے مزید کہا کہ اسرائیل نے خواتین، بچوں اور ہسپتالوں کو نشانہ بنا کر انسانیت کی تمام حدیں پار کر دیں اور خوراک کے لیے قطار میں کھڑے لوگوں کو بھی نہیں چھوڑا۔

 صدر مملکت نے عالمی برادری اور اقوام متحدہ کے دیگر اداروں بالخصوص سلامتی کونسل پر زور دیا کہ وہ غزہ میں فوری جنگ بندی کے لیے اقدامات کریں اور اسرائیل کو فلسطین میں مزید خونریزی سے روکیں۔

 صدر مملکت نے جنوبی افریقہ کی نسل کشی کی کارروائیوں پر اسرائیل کو جوابدہ ٹھہرانے کے لیے عالمی عدالت انصاف میں لے جانے کے جرات مندانہ موقف کو سراہا۔

 ***

Accessibility Tools
Increase Font

Decrease Font

High Contrast

Negative Contrast

Light Background

Links Underline

GrayScale

Readable Fonts

Reset