President Dr Arif Alvi's message on Universal Children's Day on 20th November 2023

Message from Dr Arif Alvi

President of the Islamic Republic of Pakistan

On the occasion of Universal Children’s Day i.e., 20th November 2023

***

Today, Universal Children's Day is being celebrated under the theme “For every child, every right” to reaffirm our commitment to safeguard the rights and well-being of children. Pakistan is a signatory to seven core international Human Rights Conventions, including the United Nations Convention on the Rights of the Child (UNCRC). Besides, Pakistan also ratified Optional Protocols to the UNCRC on the sale of children, child prostitution and pornography and the involvement of children in armed conflict. As a signatory to the UNCRC, Pakistan remains at the forefront to advocate, protect and promote child rights.

Children are the most precious resource of any nation and the sole guarantee for its future. Pakistan is fully alive to its responsibilities towards its children and is making all efforts to ensure children’s inclusive development, birth registration, education, health care, participation, dignity and security as envisaged in our Constitution and UNCRC.

Children in Pakistan are vulnerable to several challenges like stunting, malnutrition and lack of access to quality education & health facilities. Besides, children are facing various protection challenges like child trafficking, child marriage, child labour, corporal punishment, child abuse, children in conflict with the law, and harmful traditional practices.

Pakistan has promulgated a number of legislations including the ICT Child Protection Act, 2018, the Juvenile Justice System Act, 2018, the Zainab Alert Response and Recovery Act, 2020 and the insertion of “Child Domestic Labour” in the list of occupations of the Employment of Children’s Act, 1991. Similarly, the National Commission on the Rights of Child, ICT Child Protection Institute, Zainab Alert Response and Recovery Agency (ZARRA) and ICT Child Protection Advisory Board have also been established to protect children’s rights and create an enabling environment for them.

In accordance with national and international obligations, Pakistan has a clear vision of investing in children.  We believe that social justice and equality are the cornerstones on which the structure of a healthy society is built. This needs a committed societal response, and the communities and families need to play their role in this noble cause, particularly for the future of our nation. Our religion, Islam, enjoins parental responsibility for the well-being of children and for building their character by providing them with better education and training. The Holy Prophet (PBUH) loved children and was their most affectionate caretaker.

On this Universal Children’s Day, I call upon the relevant Government organizations, civil society, human rights groups, media, UN agencies, community, parents, teachers, Ulema and children themselves to come together and play their constructive role in the national effort to improve the lives of children in Pakistan.

***

ڈاکٹر عارف علوی

صدر اسلامی جمہوریہ پاکستان

کا عالمی یومِ اطفال ، 20 نومبر 2023 ء ، کے موقع پر پیغام

٭٭٭

آج عالمی یوم اطفال "ہر بچے کیلئے ہر حق" کے عنوان کے تحت منایا جا رہا ہے ۔ آج کے دن ہم بچوں کے حقوق اور بہبود کیلئے اپنے عزم کا اعادہ کرتے ہیں ۔ پاکستان اقوام ِمتحدہ کے بچوں کے حقوق کے کنونشن سمیت انسانی حقوق کے سات بنیادی کنونشنز پر دستخط کر چکا ہے۔  پاکستان بچوں کی خرید و فروخت، جسم فروشی ، پورنوگرافی اور جنگوں میں بچوں کی شمولیت سے متعلق اختیاری پروٹوکول کی بھی توثیق کر چکا ہے۔ اقوام ِمتحدہ کے بچوں کے حقوق کے کنونشن  پر  ایک دستخط کنندہ کے طور پر  پاکستان بچوں کے حقوق کی وکالت، تحفظ اور فروغ میں  صفِ اول میں شامل ہے۔

بچے کسی بھی قوم کا سب سے قیمتی سرمایہ  اور اس کے مستقبل کی واحد ضمانت ہیں۔ پاکستان اپنے بچوں کی جانب اپنی ذمہ داریوں سے پوری طرح واقف ہے اور  دستور ِ پاکستان اور اقوام ِمتحدہ کے بچوں کے حقوق کے کنونشن کے مطابق بچوں کی جامع ترقی، اندراجِ پیدائش ، تعلیم، صحت ، شرکت، وقار اور تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے تمام کوششیں کر رہا ہے ۔

پاکستان میں بچے ذہنی و جسمانی نشوونما میں کمی ، غذائیت کی قلت اور معیاری تعلیم اور صحت کی سہولیات تک عدم رسائی جیسے کئی چیلنجز کا شکار ہیں۔ اس کے علاوہ،  انہیں بچوں کی اسمگلنگ، شادی، چائلڈ لیبر، جسمانی سزا، بدسلوکی، قانون سے تصادم ، اور نقصان دہ  سماجی روایات جیسے تحفظ کے مختلف چیلنجز کا بھی سامنا ہے ۔

پاکستان نے آئی سی ٹی چائلڈ پروٹیکشن ایکٹ 2018 ء ،  جووینائل جسٹس سسٹم ایکٹ  2018 ء ،  زینب الرٹ ریسپانس اینڈ ریکوری ایکٹ2020 ء اور بچوں کی ملازمت کے  ایکٹ 1991 ء  میں پیشوں کی فہرست میں "چائلڈ ڈومیسٹک لیبر" کو شامل کرنے سمیت مختلف قوانین بنائے ہیں۔ اسی طرح بچوں کے حقوق کے تحفظ کیلئے بچوں کے حقوق پر قومی کمیشن ، آئی سی ٹی چائلڈ پروٹیکشن انسٹی ٹیوٹ، زینب الرٹ ریسپانس اینڈ ریکوری ایجنسی (زارا) اور آئی سی ٹی چائلڈ پروٹیکشن ایڈوائزری بورڈ بھی قائم کیے گئے ہیں تاکہ بچوں کو اُن  کے حقوق اور سازگار ماحول فراہم کیا جا سکے ۔

قومی اور بین الاقوامی ذمہ داریوں کے پیشِ نظر پاکستان بچوں پر سرمایہ کاری کے واضح وژن  کا حامل ہے۔ ہم یہ سمجھتے ہیں کہ سماجی انصاف اور مساوات ہی وہ بنیادیں ہیں جن پر ایک صحت مند معاشرے کا ڈھانچہ استوار کیا جانا چاہیے۔ اس کیلئے ہمیں معاشرتی سطح پر ایک تحریک کی ضرورت ہے۔ کمیونٹیز اور خاندانوں کو ہماری قوم کے مستقبل کیلئے اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ ہمارا مذہب اسلام بچوں کی فلاح و بہبود اور بہتر تعلیم و تربیت کی مدد سے انکی کردار سازی کیلئے والدین پر ذمہ داری عائد کرتا ہے۔ حضور نبی اکرم ﷺ بچوں سے محبت کرتے اور ان کیلئے سب سے زیادہ شفیق   اور خیال رکھنے والے تھے۔

عالمی یومِ اطفال کے موقع پر ، میں متعلقہ سرکاری اداروں ، سول سوسائٹی، انسانی حقوق کی تنظیموں، میڈیا، اقوام متحدہ کے اداروں، کمیونٹی، والدین، اساتذہ، علمائے کرام اور خود بچوں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ سب اکٹھے ہوں اور  بچوں کی زندگی میں بہتری لانے کیلئے قومی کوششوں میں اپنا تعمیری کردار ادا کریں۔

٭٭٭

Accessibility Tools
Increase Font

Decrease Font

High Contrast

Negative Contrast

Light Background

Links Underline

GrayScale

Readable Fonts

Reset